Pages - Menu

اتوار, دسمبر 10, 2017

رحمت آباد کے علاقہ میں پولیس مقابلہ، بدنام زمانہ ڈاکو منیر احمد ہلاک

بورےوالا ۔ تھانہ ماڈل ٹاؤن کے علاقے رحمت آباد میں پولیس مقابلہ، بدنام زمانہ ڈاکو منیر احمد ہلاک۔ بوریوالا سرکل میں پولیس کو متعدد وارداتوں میں بھی مطلوب تھا.

تفصیلات کے مطابق پولیس کو بذریعہ ریسکیو 15اطلاع ملی کہ دو نامعلوم مسلح افراد رحمت آباد پل عقب سٹیڈیم ناکہ لگا کر لوٹ مار کر رہے ہیں.اس اطلاع پر پولیس موقع پر پہنچی تو ڈاکوؤں نے پولیس کو دیکھتے ہی باغ کی جانب دوڑتے پولیس پر فائرنگ کی گھبراہٹ کے عالم دوڑتے اپنے ہی دوسرے ساتھی کا فائر لگنے سے منیر نامی اس ڈاکو کی موت ہو گئی.

جبکہ دوسرا فرار ہو گیا جس کی تلاش جاری ہے.ہلاک ہونے والے ڈاکو کی شناخت منیر ولد بشیر ذات جیر سکنہ کبیر والا ضلع خانیوال معلوم ہوئی ہے .ڈی ایس پی بوریوالا اور ایس ایچ او ماڈل ٹاؤن پولیس کی بھاری نفری موقع پر موجود پہنچی اور علاقہ میں ناکہ بندی کروا کر فرار ہونے والے ملزم کی تلاش شروع کر دی.

یاد رہے کہ پولیس مقابلے میں ہلاک ہونے والا منیر اپنے بوریوالا سرکل میں دہشت کی علامت سمجھا جاتا تھا جبکہ تھانہ گگو اور بوریوالا کے مختلف تھانوں مین قتل, ڈکیتی کے 10سے قریب مقدمات میں مطلوب تھا جبکہ باقی اضلاع سے بھی اس کا کریمینل ریکارڈ اکٹھا کیا جا رہا ہے .حال ہی میں 4 دسمبر کی صبح اڈا کوارٹر پر اپنے ساتھی طارق جسے پولیس ایک فیکٹری پر انہی مجرمان کو گرفتار کرنے کے لیئے چھاپے کی غرض سے لے جا رہی تھی چھڑانے کے لیئے پولیس پر اپنے ایک اور ڈاکو ساتھی طاہر ساکن ملتان کیساتھ مل کر اڈا کوارٹر سے 231 EB روڈ پرامرود کے باغ سے نکل کر حملہ کیا جس سے ان کے اپنے زیر حراست ڈاکو طارق کی موت ہو گئی تھی،

یہ ڈاکو کافی عرصے سے بورےوالہ میں ہمہ قسم جرائم راہزنی ،چوری اور چادر چار دیواری کا تقدس پامال کر کےگھروں میں گھس کر خواتین کی توہین کرنے اورڈکیتیوں جیسی خطرناک مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث اور پولیس سے بچتے چلے آ رہے.

علاقے کے لوگوں نے پولیس کی بروقت کاروائی اوربہادری کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے وہاڑی پولیس اور ڈی پی او وہاڑی زندہ آباد کے نعرے لگائے ۔ جبکہ ڈی پی او وہاڑی نے جان پر کھیل کر مقابلہ میں حصہ لینے والی ٹیم کو شاباش دی اور انعام اور تعریفی سرٹیفکیٹ کی اعلان بھی کیا۔
مکمل تحریر اور تبصرے>>

پیر, اکتوبر 2, 2017

حضرت امام حسین کی یاد میں یوم عاشور انتہائی مذہبی عقیدت و احترام سے منایا گیا

بورے والا: بورے والا میں نواسہ رسول سید الشہداء حضرت امام حسین کی یاد میں یوم عاشور انتہائی مذہبی عقیدت و احترام سے منایا گیا ،علم ،تعزیہ اور ذوالجناح کا مرکزی جلوس صبح 9 بجے امام بارگاہ حسینیہ بورے والا سے سیکورٹی کے سخت حصار میں بر آمد ہوا جلوس میں عزاداروں کی ٹولیاں ماتم ،سینہ کوبی کرتی رہیں اور نوحہ خوانی کا سلسلہ جاری رہا جلوس چوک کلاتھ مارکیٹ ،ریل بازار ،گول چوک ،وہاڑی بازار اور غلہ منڈی کے روایتی راستوں سے گزرا جلوس کی سیکورٹی اور امن و امان کے سلسلہ میں ڈی سی وہاڑی علی اکبر بھٹی ،ڈی پی او عمر سعید ملک ،ڈی ایس پی بورے والا ملک طاہر مجید ،چیئر مین بلدیہ چوہدری محمد عاشق آرائیں ،وائس چیئر مین حاجی افتخار بھٹی اور مسلم لیگ ن کے ممبر قومی اسمبلی چوہدر ی نذیر احمد آرائیں ،ممبر پنجاب اسمبلی چوہدری ارشاد احمد آرائیں کے صاحبزادے عمران ارشاد چوہدری اور امن کمیٹی کے ارکان جلوس کے ہمراہ رہے بلدیہ بورے والا کی طرف سے عاشورہ کے جلوس کے راستوں پر صفائی اور روشنی کے خصوصی انتظامات کئے گئے جبکہ محکمہ مال ،ریسکیو 1122،پولیس ،قومی رضاکارا ن اور محکمہ صحت کے حکام اور اہلکاروں نے بھرپور طریقے سے اپنے فرائض سر انجام دیئے شہر میں جگہ جگہ سیاسی ،سماجی اور تجارتی تنظیموں کی طرف سے ٹھنڈے مشروبات کی سبیلیں لگائی گئیں اور لنگر حسینی کے خصوصی انتظامات کئے گئے امر قابل ذکر ہے کہ گول چوک میں سالہاسال سے مجلس احباب کے زیر اہتمام شرکاءجلوس کی فاقہ کشی کیلئے ہونے والا وسیع لنگر مجلس احباب کے روح رواں شیخ نثار وقار کی رحلت کے بعد دو سال سے جاری نہ رہ سکا جس کی کمی شدت سے محسوس کی گئی عاشورہ کا جلوس اپنے روایتی روٹوں سے ہوتا ہوا نماز مغرب سے قبل کربلا جوئیہ رو ڈ پر خصوصی اختتامی دعا کے ساتھ اختتام پذیر ہو گیا اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر بورے والا راﺅ محمد تسلیم اختر اور ڈی ایس پی ملک طاہر مجید نے چیف آفیسر بلدیہ راﺅ محمد علی اور امن کمیٹی کے ارکان کے ہمراہ تمام محکموں کے نمائندوں اور اہلکاروں کو عاشورہ محرم کے موقع پر اپنے فرائض کی شاندار کارکردگی پر خراج تحسین پیش کیا رات کو امام بارگاہ حسینی بورے والا میں مجلس شام غریباں بپا ہوئی جس میں ذاکرین حضرت نے میدان کربلا میں حضرت امام حسین اور ان کے جانثار ساتھیوں پر ہونے والے یزیدی مظالم اور مصائب بیان کئے
مکمل تحریر اور تبصرے>>

پاکستان پیپلز پارٹی تحصیل بورے والا کی تنظیم،خواتین ونگ اور تمام سنیئر راہنماﺅں نے نئے سٹی عہدیداران کی نامزدگی پر عدم اعتماد کا اعلان کر دیا

بورے والا: پاکستان پیپلز پارٹی تحصیل بورے والا کی تنظیم، خواتین ونگ اور تمام سینئرراہنماﺅں نے نئے سٹی عہدیداران کی نامزدگی پر عدم اعتماد کا اعلان کر دیا، صوبائی صدر مخدوم احمد محمود کے پی اے عبدالقادر شاہین کے خلاف سنگین الزامات، اگر پارٹی قیادت نے بغیر مشاورت کے بنائی گئی تنظیم کا نوٹیفکیشن منسوخ نہ کیا تو تمام پارٹی عہدیداران سنیئر راہنما اور کارکنان فیصلے کے خلاف بڑا قدم اٹھانے پر مجبور ہونگے، تحصیل صدر احسن سردار بھٹی اور دیگر عہدیداران کی ہنگامی پریس کانفرنس، پاکستان پیپلز پارٹی تحصیل بورے والا کے صدر و امیدوار صوبائی اسمبلی حلقہ پی پی 233 احسن سردار بھٹی، ضلعی صدر خواتین ونگ مسرت نذیر بھٹی، تحصیل سنیئر نائب صڈر کیپٹن (ر)چوہدری محمد اسماعیل، تحصیل جنرل سیکرٹری غلام مرتضیٰ چوہان اور دیگر عہدیداران، راہنماﺅں اور کارکنان نے ہنگامی پریس کانفرنس کے دوران پیپلز پارٹی جنوبی پنجاب کے صدر مخدوم احمد محمود کی جانب سے جاری کیے گئے سٹی بورے والا کی تنظیم کے نوٹیفکیشن کو مسترد کرتے ہوئے تسلیم کرنے سے انکار کردیا پریس کانفرنس کے دوران انہوں نے الزام عائد کیا کہ صوبائی صدر مخدوم سید احمد محمود نے ڈویڑنل، ضلعی اور تحصیل کی تنظیم کے ساتھ مشاورت کیے بغیر اپنے پی اے عبدالقادر شاہین جس کا کردار ہمیشہ سے قابل مذمت رہا ہے ان کے کہنے پر ایک ایسے شخص کو پارٹی کا سٹی صدر نامزد کر دیا ہے جو ہمیشہ سے پارٹی ٹکٹ ہولڈرز کے خلاف آزاد حیثیت سے الیکشن لڑتے ہوئے پارٹی کو نقصان پہنچاتا آ رہا ہے نئے نامزد سٹی صدر کی اہلیہ شگفتہ چوہدری پارٹی کی صوبائی فنانس سیکرٹری ہیں اور انہوں نے عبدالقادر شاہین سے مبینہ ملی بھگت کرکے پارٹی کی مقامی قیادت کی طرف سے متفقہ طور پر بھیجی گئی سٹی تنظیم کی بجائے خود ساختہ تنظیم کا نوٹیفکیشن جاری کروا دیا جن کو پارٹی عہدیداران اور کارکنان ہرگز قبول نہیں کرتے عبدالقادر شاہین جو ایک بدکردار شخص ہے اور اس نے پارٹی پر خود کش حملہ کیا ہے مشکل حالات میں پارٹی کے ساتھ قربانیاں دینے والے عہدیداران اور ورکرز کے جذبات کو پاﺅں تلے روندنے کی کوشش کی گئی ہے جس پر پارٹی کی صوبائی جنرل سیکرٹری نتاشا دولتانہ، ڈویژنل صدر ملک نوشیر خاں لنگڑیال اور ضلعی صدر محمود حیات ٹوچی خاں کو بھی شدید تحفظات ہیں ہم پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور دیگر اعلیٰ قیادت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ سٹی تنظیم کے خود ساختہ اور نام نہاد نوٹیفکیشن کو فی الفور منسوخ کیا جائے ورنہ بہت جلد تمام عہدیداران، ذیلی تنظٰمیں،سنیئر راہنماء اور کارکنان کوئی بڑا فیصلہ کرنے پر مجبور ہو جائیں گے پریس کانفرنس کے دوران سٹی تنظیم کے نئے نامزد کردہ چار عہدیداران نے بھی تحصیل صدر اور دیگر کارکنان نے موقف کی تائید کرتے ہوئے نوٹیفکیشن کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کر دیا پریس کانفرنس میں حاجی عنایت اللہ وسیر، شعیب بھٹہ، محمد فاروق بھٹی، ملک اجمل فاروق، ملک بابر، رحیم بخش رحمانی، محمد سلیم درزی، مہر اختر حسین، رانا لیاقت علی، ملک فقیر محمد، شرافت علی، محمود احمد بھٹی، ملک محمد رمضان، محمد یونس چوہان، ملک صغیر انجم اور لیاقت علی بھی موجود تھے۔
مکمل تحریر اور تبصرے>>

ہفتہ, ستمبر 30, 2017

ضلع وہاڑی میں10محرم الحرام کی سکیورٹی کے حوالے کانٹیجنسی پلان تیار کر لیا گیا ۔ ڈی پی او وہاڑی عمر سعید ملک

بورے والا: ضلع وہاڑی میں10محرم الحرام کی سکیورٹی کے حوالے کانٹیجنسی پلان تیار کر لیا گیا ہے، اس سلسلہ میں  ڈی پی او وہاڑی عمر سعید ملک نے 10محرم الحرام کے سکیورٹی پلان کا تفصیلی جائزہ لیا، 10محرم الحرام کو ضلع بھر میں کل 17 مجالس اور 56لائسنسی اور روائتی جلوس برآمد ہوں گے۔ جن میں 20 اے کیٹگری کے جلوس شامل ہیں اس دوران 1852افسران و ملازمان سکیورٹی ڈیوٹی کے فرائض سر انجام دیں گے۔ اس کے علاوہ پولیس قومی رضا کاران اور والنٹیئرز بھی پولیس کے ساتھ اضافی ڈیوٹی دیں گئے۔ 10محرم الحرام کے موقع پر1آرمی کی کمپنی جبکہ 8پی سی کی پلاٹون بھی خدمات سر انجام دیں گی۔ جلوسوں کے راستوں کو خار دار تاروں سے سیل کیا گیا ہے اور ٹربل سپاٹ پوائنٹس ،مجالس اور جلوسوں کی مانیٹرنگ سی سی ٹی وی کیمرہ جات اور سرویلینس وین سے کی جارہی ہے۔ محرم الحرام کے دوران پر امن اور خوشگوارماحول کی فراہمی کے لئے تما م وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں۔
مکمل تحریر اور تبصرے>>

نواحی گاؤں307 ای بی کے قریب کپاس سے بھرا مزدا ٹرک الٹنے سے اس پرسوار پانچ افراد زخمی


بورےوالا: تھانہ ساہوکا کی حدود میں 307 ای بی کے قریب ٹریفک حادثہ، پانچ افراد سمیت کپاس سے بھرا مزدا ٹرک الٹ گیا، عینی شاہدین ی مطابق حادثہ تیز رفتاری کے باعث پیش ۤآیا اس حادثہ میں مزدا ٹرک پر سوار 5 افرار زخمی ہوگئے جن میں عامر انو، تنویرڈوگر، محمد عاشق، اللہ دتہ، ارباز ارائیں، سجاد بھٹی شامل ہیں۔ تما زخمیوں کو طبی امداد ے لئے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال منتقل کر دیا گیا
مکمل تحریر اور تبصرے>>

جمعہ, ستمبر 29, 2017

مرد کا مرد سے نکاح ،بلدیہ کے ریکارڈ سے جعل سازی بے نقاب ہو گئی

بورے والا: مرد کا مرد سے نکاح ،بلدیہ کے ریکارڈ سے جعل سازی بے نقاب ہو گئی, جعل سازی سے نکاح نامہ کی پرت تیار کر کے دلہن کی جگہ اسکے والد کا نام درج کر دیا، جعل سازوں کے منظم گروہ نے جعل سازی سے اسلامی شعار کا مذاق اڑایا ،نکاح رجسٹرار لیاقت علی ،تفصیلات کے مطابق بعض اخبارات میں خبریں شائع ہوئیں کہ طارق محمود نامی شخص نے عدالت میں پٹیشن دائر کرتے ہوئے مﺅقف اختیار کیا کہ 10مئی 2013کو نواحی گاﺅں 445ای بی میں ایک ایسے جوڑے کا نکاح رجسٹر ہوا جو کہ دونوں ہی مرد ہیں درخواست گزار نے الزام عائد کیا کہ ڈاکٹر محمد دین سکنہ ایف بلاک کا نکاح 445ای بی کے ذوالفقار احمد نامی نوجوان سے پڑھایا گیا ہے جو کہ شرعی طور پر ایک سنگین جرم ہے جبکہ ہیجان پیدا کرنے والی اس خبر کی تصدیق کے لئے جب ریکارڈ چیک کیا گیا تو معلوم ہوا کہ ڈاکٹر محمد دین کے بیٹے لیاقت علی کا نکاح ذوالفقار احمد نامی شخص کی بیٹی آمنہ بی بی سے ہوا جسے جعل سازی کرتے ہوئے طارق نامی درخواست گزار نے نکاح رجسٹر ار کو بلیک میل کرنے کے لئے اس شادی کی ایک جعلی پرت تیار کی جس میں لڑ کے کے والد کو دولہا اور لڑکی کے والد کو دلہن ظاہر کیا گیا جبکہ ریکارڈ میں موجود اصل پرت پر نہ ہی دولہا اور دولہن کے دستخط ہیں اور نہ ہی نکاح رجسٹرار کے دستخط ہیں بلدیہ بورے والا کی رجسٹریشن برانچ میں موجود نکاح رجسٹر نے اس جعل سازی کا بھانڈا پھوڑ دیا جسکے ذریعہ میڈیا میں خبریں شائع کرواکے اسلامی شعائر کا کھلم کھلا مذاق اڑایا گیا ہے نکاح رجسٹرار لیاقت علی نے بتایا کہ وہ اس جعل ساز گروپ کے خلاف مکمل قانونی چارہ جوئی کرے گا 
مکمل تحریر اور تبصرے>>

حاملہ خاتون سے زیادتی کی خبر پر ایکشن، ڈی پی او وہاڑی نے سب انسپکٹر ایاز خان کو معطل کر کے لائن حاضر کر دیا، ملزم گرفتار

بورے والا:  حاملہ خاتون سے زیادتی کی خبر پر ایکشن، ڈی پی او وہاڑی نے سب انسپکٹر ایاز خان کو معطل کر کے لائن حاضر کر دیا اور زیادتی کا شکار ہونے والی خاتون کا مقدمہ درج کر نے کا حکم دیتے ہوئے ڈی ایس پی آرگنائزڈ کرائم کو سات یوم میں انکوائری کی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا تفصیلات کے مطابق بورے والا کی نواحی بستی 259/ ای بی عثمان ٹاﺅن کی رہائشی مشاء بی بی کو واپڈا ملازم محمد اقبال جو کہ ایاز خان سب انسپکٹر کا قریبی رشتہ دار تھا نے زبردستی زیادتی کا نشانہ بنایا پولیس تھانہ صدر نے مشاءبی بی کے ساتھ ہونے والی زیادتی کا مقدمہ درج کرنے کی بجائے الٹا ملزم کی مدعیت میں چوری کا جھوٹا مقدمہ درج کر کے خالہ اور دو بہنوں کو جیل بھیج دیا میڈیا ٹیم نے موقع پر پہنچ کر اصل حقائق پر مبنی خبر شائع کی جس پر نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی او وہاڑی نے مقدمہ کے غلط اندراج پر سب انسپکٹر ایاز خان کو معطل کر کے پولیس لائن حاضر ی کے آرڈر جاری کر دیئے اور چارج شیٹ دیتے ہوئے ڈی ایس پی کرائم آرگنائزڈ کو سات دن کے اندر واقعے کے بارے میں رپورٹ جمع کروانے کی ہدایت کی ہے ڈی پی او عمر سعید ملک کی درخواست پر ملزم محمد اقبال واپڈا ملازم کے خلا ف مشاءبی بی کے ساتھ زیادتی کا مقدمہ 374بجرم 376ضمن 1پولیس تھانہ صدر نے درج کر لیا ہے جبکہ ڈی ایس پی بورے والا اور ڈی ایس پی آرگنائزڈ کرائم پر مشتمل جوائنٹ انکوائری ٹیم نے بھی اپنی تحقیقات شروع کر دی ہیںاس سلسلہ میں ایس پی انویسٹی گیشن وہاڑی میڈم زبیدہ پروین اور ڈی ایس پی آرگنائزڈ کرائم ٹکا سجاد محمد خان موقع پر پہنچے اور متاثرہ خاتون مشاءاختر کے گھر کا معائنہ کیا اور اہل محلہ سے پوچھ گچھ کی اور متاثرہ خاتون کو یقین دلایا کہ ان کے وقوعہ کے ملزم محمد اقبال کے خلاف سخت قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی اور آپ کو تحفظ فراہم کیا جائے گا جبکہ پولیس تھانہ صدر نے وقوعہ کے ملزم محمد اقبال کو گرفتار کر لیا ہے
مکمل تحریر اور تبصرے>>

جمعرات, ستمبر 28, 2017

حاملہ خاتون کو گن پوائنٹ پر زیادتی کا نشانہ بنانے والے قریبی رشتہ دار کو بچانے کے لئے پولیس والے نے قانون کی دھجیاں بکھیر دیں

بورے والا : سب انسپکٹر کی پولیس گردی سے حیوانیت بھی شرما گئی ،حاملہ خاتون کو گن پوائنٹ پر زیادتی کا نشانہ بنانے والے قریبی رشتہ دار کو بچانے کے لئے قانون کی دھجیاں بکھیر دیں، دوسرے تھانے کی حدود میں واقع متاثرہ خاتون کے گھر پر پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ دھاوا بول دیا، تھانیدار کا پیٹی بھائیوں کے ہمراہ چادر چار دیواری کا تقدس پامال کرتے ہوئے زیادتی کا شکار ہونے والی حاملہ خاتون اسکی 9سالہ کمسن بہن اور خالہ کو نیم برہنہ کرکے بیہمانہ تشدد ،نیم برہنہ حالت میں بالوں سے گھسیٹتے ہوئے اہل محلہ کے سامنے گاڑی میں ڈال کو تھانے لے گیااورچوری کا جھوٹا مقدمہ درج کرکے تینوں لاچار مظلوم خواتین کو جیل بھیج دیا ،تینوں کو عید بھی جیل میں گزارنا پڑی، ایک ماہ گزرنے کے باوجود زیادتی کرنے والے تھانیدار کے رشتہ دار کے خلاف مقدمہ درج نہ ہو سکا ،پولیس گردی کا شکار خواتین انصاف کے لئے دربدر ٹھوکریں کھانے پر مجبور واقعات کے مطابق چک نمبر 259ای بی کی رہائشی خاتون مشاءاظہر نے اپنے ساتھ ہونے والے ظلم کی داستان سناتے ہوئے میڈیا ٹیم کو بتایا کہ ہمارا والدسرکاری ملازم ہے جس نے دوسری شادی کر رکھی ہے اور ہماری والدہ انتقال کر چکی ہے جس کی وجہ سے ہم تینوں بہنیں علیحدہ گھر میں رہائش پزیر ہیں اور کپڑوں کی سلائی کڑھائی کر کے گزر بسر کر رہی ہیں اور ہماری خالہ ہمارے ساتھ رہائش پزیر ہے وقوعہ کے روز اپنے گھر میں اکیلی موجود تھی کہ مبینہ ملزم محمد اقبال ولد عبدالکریم پٹھان سکنہ 245ای بی جو کہ واپڈا میں ملازم ہے گھر میں داخل ہو گیا اور گن پوائنٹ پر مجھے اپنی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا جب میںاپنی خالہ شازیہ کے ہمراہ زیادتی کا مقدمہ درج کروانے کے لئے ایس ایچ او تھانہ صدر بورے والا کے پاس گئی توتھانے ملزم اقبال کا قریبی رشتہ دار سب انسپکٹر ایاز خان جو کہ تھانہ ماڈل ٹاﺅن میں تعینات ہے بھی وہاں موجود تھا اور اس کے کہنے پر تھانہ صدر پولیس نے زیادتی کا مقدمہ درج کرنے کی بجائے مجھے اور میری خالہ کو باری باری علیحدہ کمرے میں لے جا کر برہنہ کر کے تشدد کرتے رہے ہمیں گالیاں دے کر اوروہاں سے ہمیں دھکے دے کر بھگا دیا اور کہا کہ آپ سے زیادتی کرنے والا ملزم ہمارے ایک پیٹی بھائی سب انسپکٹر ایاز خان کا قریبی عزیز ہے اس لئے ہم آپ کا مقدمہ درج نہیں کر سکتے آپ اس سے صلح کر لیں ورنہ آ پ کو چوری کہ مقدمہ میں جیل جانا پڑے گا میرے انکا ر پر ایس ایچ او تھانہ صدر طیش میں آ گیا اور ہم خوفزدہ ہو کر واپس اپنے گھر واقع 259ای بی میں آ گئیں تقریباً سہ پہر تین بجے کے قریب میں اپنی خالہ شازیہ اور چھوٹی بہن ماہ نور جو کہ چھٹی کلاس کی طالبہ ہے کے ہمراہ گھر میں موجود تھی کی پولیس کے ملازمین دیواریں پھلانگ کر گھر میں داخل ہو گئے اور ہم خوفزدہ ہو کر کمرے میں چھپ گئیںاور اندر سے کنڈی لگا لی تو پولیس کے اہلکار سب انسپکٹر تھانہ ماڈل ٹاﺅن کے ہمراہ ہمارے کمرے کا آہنی دروازہ توڑ کر اندر آ گھسے اور سامان کو توڑ پھوڑ کے بعد ہم تینوں کو بالوں سے پکڑ کر تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے ہمارے کپڑے بھی پھاڑ ڈالے اور ہمیں نیم برہنہ کر دیا ہم تینوں پولیس کے جوانوں کے آ گے اپنی عزت کے واسطے دیتی رہیں لیکن وہ ہمیں گھسیٹتے ہوئے برہنہ حالت میںبالوں سے پکڑ کر بازار میں لے آئے اور سرکاری گاڑی میں ڈال کر تھانہ صدر لے گئے جہاں ملزم کے رشتہ دا رسب انسپکٹر ایاز خان نے اپنے ہاتھ سے ہمارے خلاف چوری کا استغاثہ تحریر کر کے محرر کے حوالے کر دیا تو تھانہ صدر پولیس نے ہمارے خلاف ملزم اقبال ہی کی مدعیت میں چوری کا جھوٹا مقدمہ درج کرنے کے بعد ہمیں جیل بھیج دیا جس کی بنا پر ہمیں اس جھوٹے مقدمہ میں عید بھی جیل میں ہی گزارنا پڑی اس مقدمہ میں 15روز بعد ہماری تینوں کی ضمانت ہوئی اور واپس گھر آ کرہم نے دیکھا ہے کہ گھر سے قیمتی سامان ،زیورات اور نقدی بھی پولیس وقوعہ کے وقت اٹھا کر لے گئی ہے جسے وہاں پر موجود لوگوں نے بھی دیکھا مظلوم بہنوں اور ان کی خالہ کے ساتھ ہونے والی اس ظلم کی داستان کے بارے میں معلومات حاصل کرنے کے بارے میں جب میڈیا کی ٹیم موقع پر پہنچی تو وہاں پر موجود علاقہ مکینوں محمد اسلم ،اکبر خان ،شازیہ ،سکینہ ،ماہ نور ،امینہ ،ناہید ،زبیدہ ،نذیراں بی بی و دیگر اہل محلہ نے وقوعہ کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ تھانہ صدر پولیس نے اپنے پیٹی بھائی کے عزیز کو بچانے کے لئے چادر چار دیواری کا تقدس پامال کرتے ہوئے مظلوم خواتین پر تشدد کیا اور ان کے سامنے برہنہ حالت میں گھسیٹتے ہوئے پولیس کی گاڑی میں ڈال کر لے کر گئے جو کہ زیادتی ہے پولیس کے اعلیٰ حکام زیادتی کا مقدمہ درج کر کے تمام ملزمان کے خلاف قانونی کاروائی کریںاس موقع پر بعض علاقہ مکین پولیس سے اتنے زیادہ خوف زدہ تھے کہ انہوں نے میڈیا کے سامنے اپنا نام صیغہ راز میں رکھتے ہوئے اس پولیس گردی کی شدید الفاظ میں مذمت کی اور مظلوم خاندان کے لئے انصاف کے حصول کا مطالبہ کیا
مکمل تحریر اور تبصرے>>

تھانہ شیخ فاضل کی حدود میں 10 منٹ کے دوران ڈکیتی کی 2 وارداتیں مزاحمت پر ڈاکووں کی فائرنگ سے 2 افراد شدید زخمی

بورے والا: تھانہ شیخ فاضل کی حدود میں 10 منٹ کے دوران ڈکیتی کی 2 وارداتیں مزاحمت پر ڈاکووں کی فائرنگ سے 2 افراد شدید زخمی۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ شیخ فاضل کے رہائشی محمد غفور سکنہ 429 ای بی اپنے موٹرسائیکل رکشہ پر سبزی منڈی سے سبزی لے جا رہا تھا کہ 2 نامعلوم موٹر سائیکل سوار بلا نمبری نے اسلحہ کے زور پر روک لیا مزاحمت پر فائر مار کر شدید زخمی کرکے نقدی اور موبائل فون چھین کر فرار ہوگئے۔دوسری واردات میں ناصر ریاض سکنہ 431 ای بی سکول جانے والی ٹیچر بہن کو لاری اڈا چھوڑ کر واپس اپنے گاوں 431 آرہا تھا کہ 2 نامعلوم موٹر سائیکل سوار بلا نمبری نے اسلحہ کے زور پر روکنے کی کوششں کی نہ رکنے پر پیچھے سے فائرنگ کر کے شدید زخمی کر دیاریسکیو 1122 نے دونوں زخمی افراد کو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال بورے والا منتقل کر دیا۔
مکمل تحریر اور تبصرے>>

بدھ, ستمبر 27, 2017

میونسپل کمیٹی کے اجلاس میں اپوزیشن ارکان کا بائیکاٹ

بورے والا: میونسپل کمیٹی کے اجلاس میں اپوزیشن ارکان کا بائیکاٹ، بائیکاٹ کے بعد چیئرمین آفس کے باہر اپوزیشن کی جانب سے الزامات کی بوچھاڑ، اپوزیشن کے چند کونسلر کو فنڈز کی عدم فراہمی، بلدیہ کے ترقیاتی کاموں پر ارکان اسمبلی کی تختیاں لگانے،اپوزیشن ارکان سے ناروا سلوک، فلٹریشن پلانٹ پر صاف پانی کی عدم فراہمی،ترقیاتی کاموں میں اپوزیشن ارکان سے مشاورت نہ کرنے سمیت دیگر الزامات عائد کر دئیے،چیئرمین بلدیہ اور ایوان کی دو تہائی اکثریت نے الزامات کو جھوٹ کا پلندہ قرار دے دیا،اپوزیشن ارکان اپنی سیاست چمکانے کے لیے شہر کی تعمیر و ترقی میں بلاجواز رکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں،ایوان کو کسی رکن کی ذاتی پسند ناپسند کے مطابق نہیں چلائیں گے،چیئرمین بلدیہ اور حکومتی ارکان کا رد عمل،ایوان نے مختلف قرار دادوں پر عوامی فلاح و بہبود اور شہر کی خوبصورتی کے لیے متعدد اقدامات کی منظوری دیدی،تفصیلات کے مطابق میونسپل کمیٹی بورے والا کا اجلاس زیر صدارت وائس چیئرمین حاجی محمد افتخار بھٹی منعقد ہوا تلاوت کلام پاک کے بعد کاروائی کا آغاز ہوتے ہی سیکرٹری ایوان ماجد یوسف بھٹی نے ارکان کی جانب سے جمع کروائی جانے والی مختلف نوعیت مسائل کی نشاندہی اور ترقیاتی کاموں کے متعلق قرار دادیں ایوان کے سامنے پیش کیں تو اپوزیشن لیڈر پی ٹی آئی کے راہنما غلام مصطفےٰ بھٹی نے چیئرمین بلدیہ پر مختلف نوعیت کے الزامات کی بوچھاڑ کر دی ا ±ن کا الزام تھا کہ چیئرمین بلدیہ کو ساتھ لیکر چلنے کا جو وعدہ کیا تھا وہ اس سے منحرف ہو گئے ہیں اپوزیشن کے چار پانچ ارکان کو دیگر ارکان کی طرح ترقیاتی فنڈز نہیں دئیے گئے شہر کی خوبصورتی کے لیے الکریم ڈویلپرز کی طرف سے فوراہ چوک اور دیگر مقامات پر کروائے گئے کاموں کا کریڈٹ چیئرمین بلدیہ لے رہے ہیں،بلدیہ کے فنڈز سے مکمل ہونے والے ترقیاتی کاموں پر ارکان اسمبلی کی تختیاں لگائی جا رہی ہیں،ریت کے ٹھیکہ میں وائس چیئرمین بلدیہ اوورچارجنگ کے ذریعہ روزانہ70ہزار روپے کی لوٹ مار کر رہے ہیں بلدیہ کا عملہ ترقیاتی کاموں میں کمیشن لے کر کریشن ختم کرنے کے دعوﺅں کی نفی کر رہا ہے وہاڑی بازار فائر بریگیڈ گیٹ پر لگے فلٹریشن پلانٹ کو24گھنٹوں کی بجائے چند گھنٹوں کے شیڈول پر چلا کر شہریوں کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی سے محروم رکھا جا رہا ہے چیئرمین بلدیہ کا رویہ اپوزیشن ارکان سے توہین آمیز ہے اگر چیئرمین بلدیہ کا ایوان میں یہی رویہ رہا تو ہم ایوان کو اس طرح نہیں چلنے دیں گے اپوزیشن لیڈر کے کہنے پر اپوزیشن ارکان میاں عبدالمتین،ملک فاروق اعوان،راﺅ غفار علی،سردار راشد عظیم،جاوید اقبال قادری،مہر طاہر امجد،شہباز حسین باجا بھٹی،شکیل حشمت،شہزاد احمدبٹ اور افتخار مٹھو اجلاس کا واک آﺅٹ کرتے ہوئے ایوان سے باہر آگئے جہاں تمام اپوزیشن ارکان نے چیئرمین بلدیہ کے جانبدارانہ رویہ اور مبینہ زیادتیوں کے خلاف شدید احتجاج کیا چیئر مین گروپ کے ا رکان سردار ظہور احمد ڈوگراور میاں خالد حسین نے اپوزیشن ارکان کو منا کر ایوان میں لانے کی کوشش کی لیکن اپوزیشن ارکان نے اجلاس کا بائیکاٹ کرتے ہوئے دوبارہ اجلاس میں جانے سے انکار کر دیا اجلاس میں مختلف ارکان کی جانب سے پیش کی گئی قرار دادوں پر ایوان کی دو تہائی اکثریت نے شہر کے مختلف مقامات سے کوڑا کرکٹ کے ڈھیر فوری ختم کرنے،فورہ چوک لاہور روڈ سے لاری اڈا تک،لاری اڈا سے چونگی نمبر5،چونگی نمبر5سے نیو سبزمنڈی ملتان روڈ اور لاری ادا سے یعقوب آباد پل تک سڑیٹ لائٹس لگانے،ملتان روڈ پر غیر ضروری کراسنگ ختم کرکے سپیڈ بریکر لگانے،واٹر سپلائی ناقابل استعمال ٹینکیاں ختم کرنے،لاری اڈا پر ٹریفک میں رکاوٹ پیدا کرنے والی مسجد کو تھانہ صدر کی جگہ پر منتقل کرنے اور اقبال نگر سکول کے ساتھ سرکاری جگہ قبضہ مافیا سے بچاﺅکے لیے ا ±سکی چار دیواری کرنے کی منظوری دیدی گئی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین بلدیہ چوہدری محمد عاشق آرائیںنے اپوزیشن کے تمام الزامات کو بے بنیاد اور بلاجواز قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم نے آٹھ ماہ کے قلیل عرصہ میں شہر کو صاف ستھرا اور خوبصورت بنانے کے لیے جو اقدامات کیے ہیں وہ عوام کے سامنے ہیں ترقیاتی فنڈز کو منصفانہ انداز میں تقسیم کرکے ترقیاتی کاموں کو معیاری اور شفاف بنانے کی ہر ممکن کوشش کی ہے کرپشن کے الزامات لگانے والے بلدیہ کے عملہ اور میری طرف سے ایک روپے کی کرپشن بھی ثابت کر دیں تو میں ایوان کے سامنے جوابدہ ہوں گا سابقہ بلدیاتی دور میں تحصیل کونسل میں کرپشن کے رکارڈ توڑنے والوں کی کرپشن کے دروازے بند کرنے اور ا ±نکی مرضی کے ٹھیکیداروں کو ٹھیکے نہ دینے پر واویلا کر رہے ہیں اپوزیشن کے کئی ارکان ہمارے اچھے کاموں کی وجہ سے انہیں چھوڑ کر آج ہمارے ساتھ بیٹھے ہیں جھوٹ الزامات اور شور واویلا مچا کر اپوزیشن ارکان شہر کی تعمیر و ترقی میں رکاوٹیں کھڑی کرنے کی کوشش کر رہے ہیں جس میں وہ ناکام ہونگے حاجی عبدالغفار بھٹی،عمران غفور،سردار ظہور احمد ڈوگر اور دیگر ارکان نے مطالبہ کیا کہ سابقہ دور میں کروڑوں روپے کی واٹر سپلائی سکیم اور دیگر ترقیاتی کاموں میں ہونیوالی بدترین کرپشن کی انکوائری کرو اکے ملوث افراد کو بے نقاب کیا جائے اجلاس میں موجود ارکان کی دو تہائی اکثریت نے چیئرمین بلدیہ کے اقدامات کو سراہا اور ا ±نکے خلاف بے بنیاد پراپیگنڈہ کا منہ توڑ جواب دینے کے عزم کا بھی اظہار کیا۔
مکمل تحریر اور تبصرے>>